1

’’سبحان اللہ‘‘ اسرائیل میں لگنے والی آگ جب ’بیت المقدس‘ کے نزدیک پہنچی تو کیا ہوا؟ جان کر ہر زبان سبحان اللہ کہہ اٹھے

’’سبحان اللہ‘‘ اسرائیل میں لگنے والی آگ جب ’بیت المقدس‘ کے نزدیک پہنچی تو کیا ہوا؟ جان کر ہر زبان سبحان اللہ کہہ اٹھے

اسلام آباد ( پرائم نیوز) اسرائیل کے مختلف شہروں میں پانچ دنوں سے بھڑکنے والی آگ مقبوضہ بیت المقدس کے نواحی علاقوں تک پہنچ گئی ہے. حیفہ شہر میں 4 دنوں بعد آگ پر قابو پا لیا گیا ہے اور 60 ہزار افراد گھروں کو واپس لوٹ آئے ہیں. اسرائیلی حکومت نے آگ لگانے کے شعبے میں 22 افراد کو گرفتار کر لیا ہے. اسرائیل شہر حیفہ کے جنگلات سے پھیلنے والی آگ نے کئی شہروں کو لپیٹ میں لے لیا ہے. 4 دنوں کی کوششوں کے بعد شہر حیفہ میں آگ پر قابو پا لیا گیا ہے، آگ سے 110 عمارتوں‌ کو نقصان پہنچا، 44عمارتیں مضدوش قرار دے دی گئی ہیں.

اسرائیلی میڈیا کے مطابق منگل سے اب تک 200 سے زیادہ مقامات پر آگ لگنےکے واقعات رپورٹ ہوئے ، آگ اب مقبوضہ بیت المقدس کے نواح تک پہنچ گئی ہے اور اس سے صرف یہودی بستی متاثر ہوئی ہے، تازہ ترین واقعے میں مقبوضہ بیت المقدس کے نواحی علاقے میں ایک رہائشی عمارت آگ کی لپیٹ میں آ گئی جس کے نتیجے میں 11 افراد زخمی ہو گئے ہیں، جن میں 2 کی حالت تشویشناک ہے.

رپورٹس کے مطابق آگ نے بیت المقدس کے قریپ پہنچ کر نزدیکی علاقوں میں تباہی مچا دی ہے لیکن ذرائع کا کہنا ہے کہ اسرائیل میں بری طرح سے تباہی مچانے اور اپنے راستے میں آنے والی ہر چیز کو جلا کر راکھ کر دینے والی خوفناک آگ جیسے ہی بیت المقدس پہنچی تو معجزانہ طور پر اس نے اپنا رخ موڑ لیا جس پر دیکھنے والے سبحان اللہ کہہ اٹھے.

نطف اور شمالی شہر الخلیل میں اب بھی کئی مقامات پر آگ لگی ہوئی ہے جو پھیل کر فلسطینی علاقے مغربی کنارے کے قریب آپہنچی، اور یہودیوں کی ایک بستی ہلمیش آگ کی لپیٹ میں آ گئی. اسرائیل سکیورٹی اداروں نے بیشتر واقعات کو آتش زنی قرار دے کر 20 سے زائد افراد کو گرفتار کر لیا ہے، بعض علاقوں میں ڈرونز سے نگرانی کی جا رہی ہے. فلسطین، ترکی، قبرص، روس اور متعدد ملکوں کے فائر بریگیڈ عملے کی مدد کیلئے آگ بھجانے کی کوشش میں مصروف ہیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں