13

عمران خان کا بدترین ریکارڈ‌ قائم ہو گیا

عمران خان کا بدترین ریکارڈ‌ قائم ہو گیا

اسلام آباد ( پرائم نیوز) قانون سازی کرنے والے پارلیمنٹرنیز، پارلیمانی لیڈرز کی حاضری انتہائی مایون کن رہی، تین سال میں وزیر اعظم نواز شریف صرف 55 اور عمران خان 16 بار اجلاسوں میں آئے. فافن کے جاری کر دہ حاضری ریکارڈ کے مطابق موجودہ پارلیمنٹ کے پہلے پارلیمانی سال میں عمران خان 12 مرتبہ حاضر ہوئے اور یہ موجودہ قانون ساز اسمبلی میں کسی رکن کی حاضریوں کا بد ترین ریکارڈ ہے.

فافن رپورٹ کے مطابق وزیر اعظم نواز شریف پہلے پارلیمانی شریف پہلے پارلیمانی سال کے 99 اجلاسوں میں سے صرف 7 میں صرف شریک ہوئے.دوسرے سال یعنی دھرنے کے سیزن میں‌وزیر اعظم 39 مرتبہ ایوان میں تشریف لائے تاہم اس پارلیمانی سال میں یہ اسکور صرف 9 رہ گیا. قومی اسمبلی میں حاضری میچ کے چیمپئن پخونخواہ ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی ٹھہرے جنہوں نے پارلیمنٹ کے 224 اجلاسوں میں شرکت کی. دوسری پوزیشن اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے اپنے نام کی اور وہ پارلیمنٹ میں 214 مرتبہ آئے.

تیسری پوزیشن پر آفتاب شیرپاؤ 195 حاضریوں کے ساتھ رہے. شیخ رشید 185 حاضریوں کے ساتھ چوتھے نمبر پر ہیں. پارلیمنٹ میں اعجاز الحق 179 مرتبہ جبکہ اے این پی کے غلام احمد بلور 138 اور مسلم لیگ فنکشنل کے پیر صدر الدین راشدی 77 مرتبہ ایوان کی کاروائی کا حصہ بنے، جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے 3 برسوں میں صرف 59 بار ہی ایوان میں حاضری دی.

اپنا تبصرہ بھیجیں