1

اللہ اکبر—’’قیامت کا منظر کیسا ہوگا؟‘‘ اللہ تعالیٰ نے دنیا ہی میں جھلک دکھا دی

اللہ اکبر—-’’قیامت کا منظر کیسا ہوگا؟‘‘ اللہ تعالیٰ نے دنیا ہی میں جھلک دکھا دی

کرائسٹ ( پرائم نیوز) نیوزی لینڈ میں پیر کی رات آنے والے خوفناک زلزلے نے ملک کے شمالی مشرقی سمندری علاقے میں ایسا لرزہ خیر منظر پیدا کر دیا کہ دیکھنے والوں کی آنکھیں کھلی کی کھلی رہ گئیں. امریکی ٹی وی CNN کی رپورٹ کے مطابق نیوزی لینڈ کے جنوبی جزیرے کے شمالی مشرقی ساحل زلزلے کے بعد اوپر کی طرف سے اٹھ گئے ہیں اور علاقے جو پہلے زیر آب تھے اب ریتلے میدان جیسے نظر آ رہے ہیں، جہاں ہر طرف تباہ و برباد سمندری نباتات اور مردہ سمندری جانوروں کی لاشیں بکھری ہیں.

رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے کہا ہے کہ سمندر کی تہہ اوسطاً 6 فٹ تک بلند ہو چکی ہے جس کے نتیجے میں وسیع و عریض علاقے پانی سے ابھرے ہوئے دکھائی دیتے ہیں. زلزلے پر تحقیق کرنے والے سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ 8-7 شدت کے سب سے بڑے جھٹکے نے سمندر تہہ میں غیر معمولی تبدیلیاں پیدا کی ہیں. ماہرین کا کہنا ہے کہ اس زلزلے کی اکثر لہریں افقی سمیت میں پیدا ہوئیں لیکن کچھ شدید جھٹکے عمودی سمت میں بھی رونما ہوئے جس کے نتیجے میں سمندر کی تہہ کے اوپر کیطرف اٹھ گئی ہے. سانئسدانوں نے کہا ہے کہ یہ صورتحال مزید ماحولیاتی تبدیلیوں کا پیش خیمہ ہو سکتی ہے، خصوصاً سمندری حیات بڑے پیمانے پر ختم ہو جائے گی اور سمندری نباتات بھی بری طرح متاثر ہوں گے. ان خوفناک تبدیلیوں کے اثرات آنے والی کئی دہائیوں تک دیکھے جائیں گے.

اپنا تبصرہ بھیجیں