1

داڑھی بڑھا کر، بیس بدل کر کہاں جاؤں گا؟ صدر باراک اوباما نے حیرت انگیز اعلان کر دیا

داڑھی بڑھا کر، بیس بدل کر کہاں جاؤں گا؟ صدر باراک اوباما نے حیرت انگیز اعلان کر دیا

اسلام‌ آباد ( پرائم نیوز) اگلی بار جرمنی آؤں گا تو چشمہ لگاؤں گا، ہیٹ پہنوں گا شاید داڑھی بھی رکھ لوں. امریکی صدر اوباما نے صدارت چھوڑنے کے بعد بھیس بدل کر سپر سپاٹے کرتیاری کر لی ہے. جرمن اخبار کو دیے گئے ایک انٹر ویو میں صدر اوباما نے کہا کہ میری مقبولیت آج بھی اس وقد ہےجتنی میری انتخاب کے وقت تھی. حقیقت یہ ہے کہ امریکا سیاسی طور پر کافی عرصے سے تقسیم ہے. ان کا کہنا ہے کہ ری پبلیکنز اکثریتی ایوان نمائندگان میں مجھے درپیش چیلنجوں سے عیاں تھا، تقسیم کی ایک وجہ شہری علاقوں میں اقتصادی ترقی کی شرح دیہی علاقوں سے بہتر ہونا ہے، اگر عالمگیر معیشت پسماندہ طبقات کو خاطر میں نہ لائی تو دنیا بھر میں ایسی تقسیم بڑھ جائے گی. ٹرمپ کے انتخاب کے حوالے سے صدر اوباما نے کہا کہ شاید لاکھوں ایسے افراد ہوں‌جنہوں نے پہلے مجھے اور بعد میں ٹرمپ کو ووٹ دیا. یہ نظریاتی بنیاد پر نہیں بلکہ تبدیلی کی لہر کیلئے ہے. انتخابی نتائج بعض اوقات امریکی عوام کے تاثرات کے مکمل ترجمان نہیں ہوتے. ان کا کہنا ہے کہ انتخابی مہم چلانا اور حکومت کرنا 2 مختلف چیزیں ہیں، ری پبلیکنز جان لیں گے کہ جن امور کو میں نے شروع کیا انہیں الٹ پلٹ کرنا فائدہ مند نہیں ہو گا. ایران نے وعدے پوری کیے، اس ڈیل کو عالمی حمایت حاصل ہے، بالآخر ٹرمپ مان لیں گے کہ ایران ڈیل کو ختم کرنا عقلمندی نہیں‌ ہو گی. امریکی نیشنل سیکیورٹی ایجنسی کیراز افشا کرنے والے سابق اہلکار اسنوڈون کے بارے میں سوال کیا گیا جس کے جواب پر انہوں نے کہا کہ ایسے شخص کو معاف نہیں کر سکتا جو عدالت کے سامنے پیش نہ ہوا ہو.

اپنا تبصرہ بھیجیں