1

’’متنازعہ جوہری معاہدہ ‘‘ جاپان کو بھارت کا ساتھ دینا راس نہ آیا

’’متنازعہ جوہری معاہدہ ‘‘ جاپان کو بھارت کا ساتھ دینا راس نہ آیا

ٹوکیو (پرائم نیوز) بھارت اور جاپان کے درمیان متنازع سول جوہری تعاون معاہدے پر جاپانی حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے. ہیروشیما اور ناگا ساکی کے میئرز نے کہا ہے کہ بھارت جوہری ٹیکنالوجی کو فوجی مقاصد کیلئے استعمال کر سکتا ہے. غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارت کے جاپان سے متنازع سول جوہری تعاون کے معاہدے پر جاپان میں بحث شروع ہو گئی ہے. کئی حلقوں نے معاہدے کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے. ایٹمی دھماکوں میں زندہ بچ جانے والوں کو جوہری پھیلا کے مخالفین نے اس معاہدے پر مایوسی کا اظہار کیا ہے. مخالفین کے مطابق بھارت جوہری ٹیکنالوجی کو فوجی مقاصد کیلئے استعمال کر سکتا ہے. ہیروشیما اور ناگا ساکی کے میئرز نے کہا ہے کہ یہ معاہدہ بہت زیادہ مایوس کن ہے، جو جاپانی عوام کی مرضی کے خلاف ہے. بھارت نے جوہری عدم پھیلا کے معاہدے پر دستخط نہیں کیے. دوسری طرف جاپانی حکومت نے کہا ہے کہ معاہدے میں ایسی شقیں رکھی گئی ہیں جن میں بھارت کو جوہری معاہدے کی خلاف ورزی نہ کرنے کیلئےزور دیا جائے گا.

اپنا تبصرہ بھیجیں