sample

لاہور میں خواتین کا بڑی تعداد میں قتل افسوسناک ریکارڈ بن گیا، پنجاب حکومت کا پریشان کن موّقف

لاہور میں خواتین کا بڑی تعداد میں قتل افسوسناک ریکارڈ بن گیا، پنجاب حکومت کا پریشان کن موّقف

لاہور (پرائم نیوز) اسی سال کے 9 ماہ کے دوران لاہورمیں 96 سے زیادا خواتین کو مختلف قسم کے واقعات کی وجہ سے قتل کر دیا گیا .قتل کے سب سے زیادا واقعات اگست کے مہینے میں ہوئے.جس میں 11 خواتین کو قتل کیاگیا.فیکٹری ایریا میں پسند کی شادی کرنے والی زینت نامی لڑکی کو اس کے بھائی اور ماں نے زندا جلا دیا.شاد باغ میں سدرہ کو اس کے دیور نے آگ لگا کر مار دیا.جبکہ ڈیفنس اے میں شازیہ نامی خاتون کو شوہر نے قتل کردیا.

مناواں میں چندہ نامی لڑکی کو اسکے بھائی نے قتل کردیا.%50 سے زائد واقعات میں قتل کی وجہ صرف عورت کے کردار پر شک تھا .پولیس کا کہناتھا کہ ایسے قاقعات کی سب سے بڑی وجہ معاشرتی رویوں میں تبدیلی ہے .ترجمان حکومت کا کہنا ھہ کہ ابھی حکومتی مشینری کوبہت کام کرنئ کی ضرورت ہے .واضح رہے کہ حقوق نسواں بل کے بعد ایسے واقعات میں کمی دیکھنے کو ملی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں