1

بریکنگ نیوز، صبح سویرے عمران خان کا نیا بیان سامنے آ گیا، بڑا فیصلہ کر لیا گیا

بریکنگ نیوز، صبح سویرے عمران خان کا نیا بیان سامنے آ گیا، بڑا فیصلہ کر لیا گیا

اسلام آباد ( پرائم نیوز) پی ٹی‌آئی کے چیئر مین عمران خان نے گزشتہ رات وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ پرویز خٹک کے قافلے پر کی جانے والی شیلنگ پر شدید تنقید کی ہے. بنی گالہ کے باہر صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا ہے کہ حکومت نے ایسے بے دردی سے شیلنگ کی جیسے کہ کوئی دشمن کی فوج آ رہی ہو. انہوں نے پرویز خٹک اور پی ٹی‌آئی کے کارکنوں کو ان کی بہادری پر خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ حکومت نے جو کچھ کیا اس سے صوبوں کے درمیان تعصب میں اضافہ ہو گا.

تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کا کہنا ہے کہ حکومت کہتی ہے کہ خیبر پختونخواہ سے مسلح جھتہ آ رہا ہے، میں یہ پوچھتا ہوں کہ اگر ان کے پاس اسلحہ تھا تو جب پولیس نے بے رحمانہ شیلنگ کی تو لوگوں نے فائرنگ کیوں نہ کی؟ اس لیے نہیں کی کیوں کہ ان کے پاس گولیاں تھیں ہی نہیں. عمران خان کا کہنا ہے کہ پولیس کی طرف سے لوگوں پر جو آنسو گیس کے شیل فائر کیے گئے وہ زائد المعیاد تھے.

عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت نے عوام سے جھوٹ بولا مسلح جھتہ آ رہا ہے، انہوں نے ایک بار پھر وزیر اعظم نواز شریف کو سلامتی کیلئے خطرہ قرار دے دیا ہے. ان کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ میں یہ معاملہ اٹھائیں گے کہ کس جرم پر پی ٹی آئی کے کارکنوں کو مارا جا رہا، اٹھایا جا رہا ہے، میں کیا جرم کیا ہے جو مجھے گھر بند کیا ہوا ہے؟ انہوں نے مزید کہا کہ افسوس ک بات ہے کہ کل کسی جج نے کہا کہ عمران خان عدالتوں پر دباؤ ڈال رہا ہے، کیا عدالتوں سے انصاف مانگنا دباؤ ڈالنا ہے؟ انہوں نے کہا ہے کہ میں نے عدالتوں پر کوئی دباؤ نہیں ڈالا میں صرف انصاف مانگ رہا ہوں ، اپنا حق مانگ رہا ہوں.

جب عمران خان سے سوال کیا گیا کہ شیخ رشید کہہ رہے ہیں کہ اب عمران خان کو باہر نکل جانا چاہیئے تو اس حوالے سے عمراں خان نے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ کپتان اپنی حکمت عملی کے تحت چلتا ہے اور میری حکمت عملی 2 نومبر کی ہے، 2 تاریخ کو چاہے جو بھی ہو جائے جو بھی رکاوٹیں ڈال دیں میں نکلوں گا چاہے پیدل ہی کیوں نہ جانا پڑے.

اپنا تبصرہ بھیجیں