1

تمام شراب خانے بند کر دیے جائیں… عدالت نے حکم جاری کر دیا

تمام شراب خانے بند کر دیے جائیں… عدالت نے حکم جاری کر دیا

اسلام آباد ( پرائم نیوز) سندھ ہائیکورٹ نے فی الفور صوبے بھرمیں‌ تمام شراب خانے بند کرنے اوران کے لائسنس کو منسوخ کرنے کا حکم جاری کر دیا ہے. سندھ ہائی کورٹ میں مسلم آبادیوں اور سکول کے قریب واقع شراب خانوں کو بند کرنے کی درخواست کی سماعت ہوئی. سندھ پولیس کی طرف سے آئی جی سندھ عدالت میں پیش نہ ہوئے جس پر عدالت نے برہمی اظہار کیا ہے. عدالت نے فریقین کے دلائل کی سماعت کرنے کے بعد صوبے بھر میں فوری طور پر تمام شراب خانے بند کرنے اور ان کے لائسنس منسوخ کرنے کا حکم دے دیا ہے.

چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ سجاد علی شاہ نے کیس کےبارے میں ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ شراب خانوں کے لائسنس بغیر تحقیقات کے جاری کئے گئے، یہ تحقیق ہی نہیں‌کی گئی کہ کس مذہب میں کسی تہوار پر شراب پینے کی اجازت ہے. اقلیتی برادری کو شراب پینے کے نام پر بدنام کیا جا رہا ہے، جب کوئی مذہب شراب کی اجازت نہیں دیتا تو سارے لائسنس منسوخ کر دیں. عدالت نے نئے لائسنس کیلئے نیا ضابطہ اخلاق بنانے اور آئی جی سندھ کو فوری حکم سے آگاہ کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے سندھ حکومت سے عمل درآمد کی رپورٹ طلب کر لی ہے. اس سے پہلے سندھ ہائی کورٹ میں محکمہ ایکسائز کی طرف سے مسلم آبادیوں اور سکول کے قریب شراب خانوں کے خلاف رپورٹ عدالت میں جمع کرائی گئی. رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ عدالتی حکم پر 160 شراب خانوں کو نوٹسز جاری کر دیے گئے ہیں. نوٹسز حدود آرڈیننس 1979 سیکشن 17 کی خلاف ورزی کرنے پر جاری کئے گئے تھے. نوٹس کا خطر خواہ جواب نہ دینے پر لائسنس منسوخ کرنے کا عمل شروع کردیا گیا ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں