1

چین نے ایک اور ملک کے ساتھ دوستی مستحکم بنانے کا فیصلہ کر لیا

چین نے ایک اور ملک کے ساتھ دوستی مستحکم بنانے کا فیصلہ کر لیا

اسلام آباد ( پرائم نیوز) چین اور صدر شی جنگ پنگ کے جنوب مشرقی ایشیائی ملک کے دورے کے دوران پچھلے دنوں یہاں ایکی مشترکہ اعلامیہ پر دستخط کئے گئے جس میں 2 طرفہ تعاون اور روایتی تعاون دوستی کو مزید مستحکم بنانے کا ارادہ کر لیا ہے، اپنے دورے کے دوران شی نے بالترتیب کمبوڈیا کے شانور وڈونگ سہا مونی اور وزیر اعظم ہن سین سے ملاقات کی، طرفین نے دو طرفہ جامع سٹرٹیجک کو آپریٹو پارٹنرشپ کو مزید مستحکم کرنے کے علاوہ مشترکہ دلچسپی کے بین الاقوامی اور علاقائی امور سے متعلق تبادلہ خیال کیا اور دونوں کے درمیان وسیع تر اتفاق رائے طے پایا.

مشترکہ اعلامیہ کے مطابق چین اور کمبوڈیا چین کے بیلٹ وروڈ منصوبے اور کنبوڈیاق کی چوکور حکمت عملی کے ساتھ تیرھویں پنچسالہ منصوبے اور 2015-2015ء کی صنعتی پالیسی کی مطابقت بڑھانے سے اتفاق کیا، دونوں ملکوں نے دو طرفہ تجارت کا حجم 2017ء میں پانچ بلین امریکی ڈالر کرنے کیلئے کام کرنے سے بھی اتفاق کیا ہے، معیشت، ٹیکنالوجی، انفراسٹرکچر، انسانی سمگلنگ کا خاتمہ کرنے کی کوششوں، ٹیکس و بحری تعاون کے علاوہ دیگر متعدد شعبوں سے متعلق مجموعی طور پر تعاون کی 31 دستاویزات پر دستخب کیے گئے ہیں، چین نے توانائی تار مواصلات، زراعت، صنعت اور سیاست جیسے شعبوں میں کمبوڈیا کے ساتھ زیادہ سرمایہ کاری اور تعاون گروپ سمیت کثیر الجہتی فرہم ورکوں کے تحت رابطے کو مزید مستحکم بنانے سے بھی اتفاق کیا ہے، دونوں ملکوں نے ایک دوسرے کے اہم مفادات کے امور کے بارے میں قریبی اور موثر مراسلت کو جاری رکھنے سے بھی آمادگی کا اظہار کیا ہے.

جبکہ دوسری طرف کیوبا میں چین کے سفیر زانگ ٹونے پچھلے دنوں دوستی کا میڈل بھی حاصل کیا جو کہ غیر ملکی سفارتکار کیلئے حکومت کیوبا کی طرف سے دیا جانے والا اعلیٰ ترین اعزاز ہے، اس میڈل کے‌ذریعے دونوں ملکوں کے درمیان مراسم کو مستحکم بنانے کیلئے سفیر کی طرف سے کی جانے والی کوششوں کا اعتراف کیا گیا، کیوبا کے وزیر خارجہ امور برونوروراڈریگز نے نظام کو یہ میڈال پیش کیا اور پچھلے چار سال نو مہینوں میں چینی سفارتخانے میں ان کے کامیاب کام پر مبارک باد بھی پیش کی.

اپنا تبصرہ بھیجیں