1

58 اسلامی ممالک اگر یہ ایک کام کر لیں تو بھارت کی نیندیں‌ حرام ہو جائیں، اہم مشورہ دے دیا گیا

58 اسلامی ممالک اگر یہ ایک کام کر لیں تو بھارت کی نیندیں‌ حرام ہو جائیں، اہم مشورہ دے دیا گیا

اسلام آباد ( پرائم نیوز) سابق گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے مسئلہ کشمیر کےحل کیلئے امت مسلمہ سے متحد ہونے کا مطالبہ کیا ہے. ان کا کہنا ہے کہ 58 اسلامی ممالک اگر مسئلہ کشمیر کے حل تک بھارت سے تجارتی بائیکاٹ کر دیں تو بھارت کی نیندیں اڑجائیں گی، بھارت کشمیر کا مسئلہ حل نہ کر کے خود اپنے پاؤں پر کلہاڑی مار رہا ہے، پاکستان کشمیریوں کی سفارتی اور اخلاقی سپورٹ سے ایک انچ بھی پیچھے نہیں ہٹے گا، مسئلہ کشمیر کا حل صرف اور صرف اقوام متحدہ کی قرار دادوں پر عمل کرنے سے ہی ممکن ہو سکتا ہے، بھارت بندوق اور گولی سے کشمیریوں کی آواز کو دبا نہیں سکتا. وہ مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کی مہم کے دوران برسلز میں پاکستانی کمیونٹی کے اپنے اعزاز میں منعقد ظہرانے اور مسئلہ کشمیر کے موضوع پر کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے. اس موقع پر یورپی پارلیمنٹ کے رکن سجاد کریم سمیت دیگرارکان بھی موجود تھے.

سابق گورنر پنجاب چوہدری سرور کا کہنا ہے کہ حکومت پاکستان کو بھی چاہیئے کہ وہ مسئلہ کشمیر کو دنیا میں اجاگر کرنے کیلئے مزید اقدامات کریں. ان کا کہنا ہے کہ بھارت اپنے سازشی منصوبے کے تحت دنیا میں پاکستان اور کشمیریوں کے بارے میں منفی پروپیگنڈا کرنے میں مصروف ہے جس کیلئے ضروری ہے کہ ہم اس کی اس سازش کو پوری دنیا کے سامنے نہ صرف بے نقاب کریں بلکہ دنیا کو مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی طرف سے کی جانے والی دہشت گردی بارے میں بھی بتائیں، اس لیے میں آج یورپ کے دورے میں اراکین پارلیمنٹ اور دیگر تنظیموں کو بھارتی دہشت گردی کے ثبوت دکھا رہا ہوں.

ان کا مزید کہنا ہے کہ دنیا کو ایک بات سمجھ لینی چاہیئے اگر پاکستان اور بھارت میں جنگ ہو گی تو دنیا کے باقی تمام ممالک بھی اس کے اثرات سے محفوظ نہیں رہیں گے اس لیے تمام ملکوں کو چاہیئے کہ وہ بھارت کے مظالم کو رکوانے کیلئے سفارتی سطح پر اقدامات کریں اور مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے مطابق حل کرنے میں کوشاں رہے اور کشمیریوں کو ان کی مرضی کےمطابق فیصلہ کرنے کا حق دیا جائے.

انہوں نے کہا ہے کہ بھارت پاکستان کو جنگ کی دھمکیاں دینے سے باز آ جائے کیونکہ بھارت نے کوئی ایسی غلطی کی تو پاک فوج اور عوام ملک کر بھارت کو صفحہ ہستی سے مٹا دیں گے اس موقع پر یورپی پارلیمنٹ کے رکن سجاد کریم کا کہنا ہے کہ بھارت کو دنیا کے سامنے بے نقاب کرنے کیلئے چوہدری سرور نے جو مہم شروع کی ہے پاکستانی کمیونٹی بھی اس کو مکمل سپورٹ کر رہی ہے اور بھارت جو مرضی کر لیں اس کو مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے مطابق حل کرنا ہی پڑے گا.

اپنا تبصرہ بھیجیں