1

جاوید میانداد، شاہد آفریدی تنازعہ ’’شاید میانداد کے پاس کوئی ثبوت ہے جس کی بناء پرانہوں نے الزام لگایا‘‘ یہ بیان کس نے دیا؟

جاوید میانداد، شاہد آفریدی تنازعہ ’’شاید میانداد کے پاس کوئی ثبوت ہے جس کی بناء پرانہوں نے الزام لگایا‘‘ یہ بیان کس نے دیا؟

اسلام آباد ( پرائم نیوز) پاکستان کرکٹ بورڈ کے سابق چیئرمین خالد محمود کا کہنا ہے کہ جاوید میانداد نے 1999 میں بھی دو مرتبہ ٹیم پر میچ فکسنگ کا الزام لگایا تھا. میانداد اور شاہد آفریدی کا معاملہ سنگین موڑ پر جا پہنچا ہے، میانداد کے پاس دو ہی راستے ہیں، وہ آفریدی کے خلاف ثبوت پیش کریں یا پھر معذرت کریں.

ایک انٹر ویو میں سابق چیئرمین پی سی بی خالد محمود کا کہنا ہے کہ میانداد نے 1999ء میں موہالی ٹیسٹ پر شک کا اظہار کیا تھا، شارجہ کے ایک میچ پر بھی سوال اٹھایا تھا. خالد محمود کے مطابق میچ فکسنگ سنگین مسئلہ ہے، ہمارے کھلاڑی اس میں ملوث رہ چکے ہیں لیکن یہ گھٹیا ملزم کو بھی سماعت کا موقع فراہم کیا جاتا ہے. خالد محمود نے خیال ظاہر کیا ہے کہ شاید میانداد کے پاس کوئی ثبوت ہے جس کی بناء پر انہوں نے آفریدی پر الزام تراشی کی ہے. دو سینئر کھلاڑیوں نے جاوید میانداد پربلا بھی تان لیا تھا. انہیں ثبوت پیش کرنا چاہیئے، ورنہ الزامات کی بھاری قیمت چکانی پڑے گی. ان کا مزید کہنا ہے کہ میچ فکسنگ کی تحقیقات کرنی چاہیئے، بھارت آئی سی سی میں معاملہ اٹھا سکتا ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں