1

بارہ سالہ معصوم بچے نے بہادری کے جذبے سے سرشار ہوکر بھارتی فوجی کے سامنے سینہ تان کرایسا کیا نعرہ لگایا کہ ہر آنکھ اشک بار ہو جائے

بارہ سالہ معصوم بچے نے بہادری کے جذبے سے سرشار ہوکر بھارتی فوجی کے سامنے سینہ تان کرایسا کیا نعرہ لگایا کہ ہر آنکھ اشک بار ہو جائے

سری نگر ( پرائم نیوز) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ظلم و ستم کے نتیجے میں شہید ہونے والے 12 سالہ معصوم ننھے جنید کا سکول کارڈ سوشل میڈیا پر شائع ہو چکا ہے. جس کے مطابق جنید احمد ساتویں جماعت کا طالبعلم تھا، جنید کے قتل کے خلاف مقبوضہ وادی میں اتوار کو ہزاروں افراد نے احتجاج کیا اس دوران ایک کشمیری بچے نے بھارتی فوجی کے آگے سینہ تان کر آزادی کا نعرہ لگایا، قریب کھڑا بھارتی فوجی اسے کچھ نہ کہہ سکا.

میڈیا رپورٹس کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ظلم و ستم کے نتیجے میں شہید ہونے والے 12سالہ معصوم جنید کا سکول کارڈ سوشل میڈیا پر وائرل ہوا ہے. جنید احمد کے سکول کارڈ پر اس کے سکول کا نام نیو بانونٹ انگلش سکول والی مسجد عید گاہ سرینگر کا پتہ درج ہے. جنید علی ساتویں جماعت کا طالبعلم تھا اور اسکے کارڈ پر رول نمبر اور بس نمبر بھی لکھا گیا تھا.

دوسری طرف مقبوضہ کشمیر میں بارہ سالہ معصوم بچے جنید کے قتل کے خلاف ہزاروں افراد نے مظاہرہ کیا، بھارتی مظالم کے خلاف کیے جانے والے اس مظاہرے میں شریک ایک شہری بچہ بھارتی فوجی کے آگے سینہ تان کر کھڑا ہو گیا. ننھے سے بچے کی بہاری اور وی وانٹ فریڈم کے نعرے سن کر بھارتی فوجی کچھ نہ کہتے ہوئے پیچھے ہٹ گیا. واضح رہے کہ آج بھی بھارتی فوجی کے ہاتھوں 12 سالہ بچے کی شہادت کے باوجود کشمیری عوام میں جذبہ آزادی میں درہ برابر بھی کمی دیکھنے کو نہ ملی.

فوٹیج میں واضح طور پر دیکھا جا سکتا ہے کہ یہ بچہ جذبہ آزادی سے سرشار ہو کر بھارتی فوجی کے سامنے کھڑے ہو کر فلک شگاف نعرے لگا رہا ہے. جبکہ بھارتی فوجی نے اس پر اپنی بندوق بھی تان رکھی ہے. خیال رہے کہ مقبوضہ وادی میں بھارتی قابض فوج کے ہاتھوں پیلٹ گن سے چھلنی ہونے والا 12 سالہ بچہ شہید ہو گیا. مظاہرین شہید بچے کاجنازہ لے کر نکلے توغاصب فوج نے شیلنگ کر کے کئی افراد کو زخمی کر دیا، جنید کا جسد خالی ہلالی پرچم میں لپیٹ کر آخری آرام گاہ پہنچایا گیا. کشمیر کی تحریک آزادی میں جام شہادت نوش کرنے والے کشمیریوں کی تعداد 100 سے تجاوز کر گئی ہے جبکہ ہزاروں افراد زخمی ہوئے ہیں لیکن پھر بھی بھارتی جارحیت کے خلاف سینہ تان کر آزادی کے جذبے سے سرشار کھڑے ہیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں