1

نیا آرمی چیف کس کو مقرر کیا جائے گا؟ فیصلہ بھی ہو گیا، سینئر تجزیہ نگار نے بڑا دعویٰ کر دیا

نیا آرمی چیف کس کو مقرر کیا جائے گا؟ فیصلہ بھی ہو گیا، سینئر تجزیہ نگار نے بڑا دعویٰ کر دیا

اسلام آباد ( پرائم نیوز) نجی ٹی وی پروگرام میں سینئرتجزیہ نگار نے دعویٰ کیا ہے کہ نیا آرمی چیف کون مقرر کیا جائے گا؟ اس بارے میں فیصلہ بھی سنا دیا گیا ہے، سینئر تجزیہ نگار کا کہنا ہے کہ نام کا اعلان اگلے کچھ ہفتوں میں کسی بھی وقت کر دیا جائے گا، نئے چیئرمین جوائنٹ چیف آف اسٹاف کمیٹی کی تعینات بھی آرمی چیف کے ساتھ ہی ہو گی. سینئر اینکر پرشن کامران خان کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم نواز شریف نے آرمی چیف جنرل راحیل شریف کی مدت ملازمت میں توسیع نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے، نئے آرمی چیف کے نام کا فیصلہ بھی کر لیا ہے. وزیر اعظم نے اس بارے میں اپنے قریبی دوستوں سے بھی مشورہ کیا ہے، ان کے ساتھیوں نے انہیں موجودہ صورت حال کے پیش نظر راحیل شریف کی مدت ملازمت میں توسیع کا مشورہ دیا ہے.

نواز شریف نے موقف اختیار کیا تھا کہ وہ موجودہ آرمی چیف کے مداح ہیں لیکن افواج پاکستان میں ترقیاں او تقرریاں روٹین کے مطابق ہونی چاہیئں. کامران خان کا اپنے ذرائع کے حوالے سے کہنا ہے کہ اگر انتہائی غیر معمولی واقعہ نہ ہوا تو جنرل راحیل شریف 29 نومبر کو اپنا عہدہ چھوڑ دیں‌گے، چیئرمین جوائنٹ چیف آف سٹاف کمیٹی جنرل راشد محمود بھی اسی دن ریٹائر ہوں گے اور دونوں بڑے عہدوں پر نئی تعیناتیاں ایک ساتھ ہی کی جائیں گے. اس بارے میں اگلے 50 دن کے دوران 3 لیفٹینیٹ جنرلز کو فور سٹار جنرلز کے عہدوں پر ترقی بھی دے دی جائے گی.

خیال رہے کہ اس سے پہلے یہ خبریں گردش کر ہی تھیں کہ پاک فوج کی ہائی کمان میں بڑے پیمانے پر تبدیلیاں رونما ہونے کی توقع ہے اور آئی ایس آئی کے سربراہ جنرل رضوان اخترر کو کور کمانڈر کراچی کی ذمہ داریاں سونپنے کی امید ظاہر کی جا رہی ہے. نجی اخبارمیں بتایا گیا ہے کہ جنرل رضوان 22 ستمبر 2014ء کو آئی ایس آئی کے سربراہ بنے تھے. اس سے قبل بطور میجر جنرل وہ ڈی جی رینجرز سندھ کے عہدے پر تعینات رہے اور کراچی آپریشن کو لیڈ کیا تھا. وہ شمالی وزیرستان میں بھی اپنی خدمات سرانجام دے چکے ہیں. اسی وجہ سے ان کو کور کمانڈر کراچی تعینات کئے جانے کا امکان ہے. جبکہ کور کمانڈو کراچی لیفٹینینٹ جنرل نوید مختار کو ڈی جی آئی ایس آئی لگانے کی توقع ہے. یہ بھی ممکن ہے کہ میجر جنرل احمد محمود حیات کو لیفٹینینٹ جنرل کے عہدہ پر ترقی دے کر ڈی جی آئی ایس آئی لگا دیا جائے.

اپنا تبصرہ بھیجیں