1

اپنے لیپ ٹاپ کے ساتھ یہ کام ضرور کرلیں ورنہ… ایف بی آئی ڈائریکٹرنے خبردار کردیا

اپنے لیپ ٹاپ کے ساتھ یہ کام ضرور کرلیں ورنہ… ایف بی آئی ڈائریکٹرنے خبردار کردیا

اسلام آباد ( پرائم نیوز) امریکی تحقیقاتی ادارے ایف بھی آئی نے انٹرنیٹ صارفین کو مشورہ دیا ہے کہ وہ جاسوسی سے بچنا چاہتے ہیں تو اپنے کمپیوٹرز کے ویب کیمروں کو ڈھانپ کر رکھیں. ایف بی آئی کے سکیورٹی ماہرین نے دعویٰ کیا ہے کہ ویب کیمروں کو کھلا چھوڑ دینا ہیکرز کو ان کو کنٹرول کرنے اور صارفین کی ہرحرکت کو دیکھنے کا موقع فراہم کرنے کے مترادف ہے. واضح رہے کہ اس سال کے آغاز میں فیس بک کے بانی مارک زکربرگ کی بھی ایسی تصاویر سامنے آئی تھیں جس میں انہوں نے اپنے میک بک پروکے ویب کیمرے کو کور کررکھا تھا.

اب ایف بی آئی کے ڈائریکٹر جیمزکومے نے بھی یہ مشورہ دیا ہے. ان کا کہنا ہے کہ یہ وہ بہترین چیز ہے جو انٹرنیٹ صارفین کرسکتے ہیں. اگرچہ لیپ ٹاپ یا ڈیسک ٹاپ کمپیوٹر پرلگے یہ کیمرے کافی کارآمد ہوتے ہیں مگریہ وہ ڈیوائس بھی ہے جس تک رسائی ہیکرزکیلئے آسان ہوتی ہے. ایک بار وہ ایسا کرلیں تو وہ آسانی سے اس کمپیوٹر کے اردگرد کے مناظر اور آوازیں ریکارڈ کر کے بعد ازاں انہیں لوگوں کو بلیک میل کرنے، سیکیورٹی سسٹمر توڑنے یا کسی اور مقصد کیلئے استعمال کرسکتے ہیں.

ایف بی آئی ڈائریکٹرنے کہا ہے کہ سرکاری دفاتر سمیت عام لوگوں کو بھی اپنے ان کیمروں کو کور رکھنا چاہیئے. آج کل کی دنیا میں اکثردفتروں میں کمپیوٹر اسکرین کے اوپر ایک چھوٹا سا کیمرہ ہوتا ہے اور اگران کو کور کر کے نہ رکھا جائے تو ایسے لوگ آپ پر نظررکھ سکتے ہیں جن کو ایسا کرنے سے روکنا ضروری ہے. اس سے پہلے امریکا کی ساؤتھ فلوریڈا یونیورسٹی کی ایک ماہرپروفیسر کیلی برنس کا اپنے دعویٰ میں کہنا ہے کہ فیس بک ایپ لوگوں کے اسمارٹ فونز کے مائیک استعمال کرتے ہوئے لوگوں کا ڈیٹا اکٹھا کرتی ہے. فیس بک خود تسلیم کرتی ہے کہ اس کی ایپ صارفین کے اردگرد کی آوازوں کو سنتی ہے مگر اس کا مقصد یہ جاننا ہوتا ہے کہ لوگ کیا سن یا دیکھ رہے ہیں تاکہ پوسٹ کے حوالے سے ان کی پسند اور نا پسند کا خیال رکھا جا سکے جبکہ اس سے لوگوں کی نجی بات چیت کو ریکارڈ نہیں کیا جاتا.

اپنا تبصرہ بھیجیں