1

اسلام کا بول بالا، سعودی عرب میں متعین برطانوی سفیرنے اسلام قبول کرنے کے بعد حج کا فریضہ بھی سرانجام دے دیا

اسلام کا بول بالا، سعودی عرب میں متعین برطانوی سفیرنے اسلام قبول کرنے کے بعد حج کا فریضہ بھی سرانجام دے دیا

ریاض/ لندن ( پرائم نیوز) غیر ملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب میں متعین برطانوی سفیر سائمن کولسن نے قبول اسلام کے بعد اپنی اہلیہ کے ہمراہ حج کی ادائیگی کی ہے. سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر دونوں میاں بیوی کی حج کے دوران تصویر نے دھوم مچا دی ہے. کنگ سعود یونیورسٹی کی فوزیہ البکر کے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے جاری اس تصویر میں انہوں نے عربی میں عبارت تحریر کی ہے جس میں انہوں نے لکھا کہ سائمن کولسن نے اپنی اہلیہ ہھدیٰ کے ساتھ حج کیا اور حج ادا کرنے والے پہلے برطانوی سفیرہیں. برطانوی سفیر کو حج کی ادائیگی پرمبارکباد دینے والے ٹوئٹر صارفین میں سعودی شہزادی بسمہ بنت سعود بھی شامل ہیں.

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق برطانوی سفیر سائمن کولسن نے 30 سال تک اسلامی معاشرے میں رہننے کے بعد آخرکار 2011ء میں اسلام قبول کرلیا تھا. اس کی شادی شام سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون ہھدیٰ سے ہوئی ہے. کولسن کو 2015ء میں ریاض میں برطانوی کی حیثیت سے تعینات کیا گیا تھا. اس سے پہلے وہ مشرق وسطیٰ کے کئی مملک میں سفیر کے فرائض انجام دی چکے ہیں. 2012ء میں انہیں شام سے اس وقت سیکورٹی خدشات کی بناء پر ملک واپس بلوا لیا گیا تھا جب انہوں نے کھلم کھلا صدر بشارالاسد کی حکومت کے شامی خانہ جنگ میں کردار پر سوال اٹھایا. انہوں نے تیونس، دہلی اور عمان میں بھی برطانوی قونصل جنرل کی حیثیت سے فرائض سرانجام دیے.

اپنا تبصرہ بھیجیں