1

اگرآپ کا بچہ ذہین نہیں ہے تو یہ کام ضرور کریں، ماہرین کی شاندار تحقیق

اگرآپ کا بچہ ذہین نہیں ہے تو یہ کام ضرور کریں، ماہرین کی شاندار تحقیق

لاہور ( پرائم نیوز) ایک نئی تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ تیل والی مچھلیاں کھانے سے بچوں میں پڑھنے اور سمجھنے کی صلاحیت میں اضافہ کیا جا سکتا ہے. اسکی وجہ یہ ہے کہ سامن، ٹونا، سرمئی، سارڈین اور میکرل مچھلیوں میں تیل پایا جاتا ہے جن میں اومیگا تھری وافر مقدار میں پایا جاتا ہے. اس کے علاوہ ان مچھلیوں میں اومیگا سکس بھی موجود ہوتا ہے.

ماہرین نے تجرباتی طور پر اسکول کے بچوں کو اومیگاتھری اور اومیگا سکس سپلیمنٹ ( گولیاں یا کیپسول) دیئے اور دوسرے گروہ کو فرضی گولیاں ( پلے سیبو) دی. 1 ماہ بعد دونوں گروہوں کی تعلیمی صلاحیت کا جائزہ لیا گیا جس سے یہ بات پتا چلی کہ جن بچوں کو سپلیمنٹ دیئے گئے تھے ان میں الفاظ کو سمجھنے، پڑھ کر سمجھنے اور تصاویر کے جائزے کی صلاحیت بہترہو گئی.

اپنی تحقیق پر بات کرتے ہوئے آکسفورڈ یونیورسٹی کے سائنسدان نے کہا ہے کہ والدین اپنے بچوں کو مچھلی ضرور کھلائیں ورنہ اومیگا تھری کی گولیاں کھلائیں لیکن مچھلی کھانا زیادہ فائدہ مند ثابت ہو گا. دنیا کے ترقی یافتہ ممالک میں بھی بچے مچھلی سے جی چراتے ہیں. ضروری ہے کہ انہیں مچھلی برگرکی صورت، کیچپ کے ساتھ یا کسی اور طریقے کے ساتھ دی جائے.

اس سے پہلے کئی مطالعات سے پتا چلا کہ تیل بردار مچھلیوں سے بچوں کی تعلیمی صلاحیت میں اضافہ ہوتا ہے اور مطالعے میں جن بچوں کو دونوں طرح کے اومیگا دیے گئے ان میں 64 فیصد بہتری دیکھنے کو ملی.

خیال رہے کہ یہ سپلیمنٹ سویڈن کے 12 اسکولوں میں 8 سے 10 سال کے بچوں کو 6 ماہ تک دیے گئے تھے اور اس دوران ان کے پڑھنے کی صلاحیت اور سیکھنے میں تیزی کو نوٹ کیا گیا.

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں