1

انتہائی افسوس ناک خبر، فیکٹری میں بوائلز دھماکہ، درجنوں افراد ہلاک اور زخمی

انتہائی افسوس ناک خبر، فیکٹری میں بوائلز دھماکہ، درجنوں افراد ہلاک اور زخمی

ڈھاکا ( پرائم نیوز) بنگلہ دیش کے دارلحکومت ڈھاکا کے نواح میں واقع قصبے ٹونگی کی ایک پیکجنگ فیکٹری میں بوائلر پھٹنے سے آگ لگ گئی جس کے نتیجے میں 15 افراد جھلس کر ہلا ک جبکہ 70 زخمی ہو گئے.

خبررساں ادارے اے ایف پی نے ٹونگی کے سرکاری اسپتال کے ایک ڈاکٹر پرویز میاں کے حوالے سے بتایا ہے کہ آگ لگنے کے نتیجے میں ہلاکتوں کی تعداد 15 ہو چکی ہے جبکہ 70 زخمی ہیں. ان کا کہنا ہے کہ شدید زخمیوں کو ڈھاکا کے ہسپتالوں میں پہنچا دیا گیا ہے.

پولیس کا کہنا ہے کہ آگ بوائلر پھٹنے کے باعث آگ بھڑک اٹھی، واقعے کے وقت 4 منزلہ فیکٹری میں 100 کے قریب افراد کام کر رہے تھے. پولیس انسپکٹر سراج الاسلام نے اے ایف پی کو کہا ہے کہ آگ پر ابھی تک قابو نہیں پایا جا سکا اور بہت سے لوگ ابھی تک عمارت میں پھنسے ہوئے ہیں. بنگلہ دیش کی انڈسٹریل پولیس یونٹ کے تہمید الاسلام کا کہنا ہے کہ فیکٹری کے گراؤنڈ‌فلور پر کیمیکلز اسٹور کیے گئے تھے. یہی وجہ ہے کہ ہفتے کی صبح 6 بجے لگنے والی آگ تیزی سے پھیل گئی.

انہوں نے مزید بتایا ہے کہ درجنوں فائر فائٹرز آگ پر قابو پانے کی کوشش کر رہے ہیں. فیکٹری میں فوڈ آئٹمزجیسے کہ آلو کے چپس اور مچھر بھگانے والے کوائلز سمیت دیگر اشیائے ضروریہ کے پلاسٹک بیگز تیار اور پرنٹ کیے جاتے ہیں. بنگلہ دیش میں فیکٹریوں میں آگ لگنے کے واقعات سمیت دیگر حادثات بھی ہوتے رہتے ہیں، جن کی بڑی وجہ حفاظتی قوانین پر عمل پیرا نہ ہونا ہے. نومبر 2011ء میں ڈھاکا کے نواح میں واقع آشولیا انڈسٹریل ایریا میں واقع ایک 9 منزلہ فیکٹری میں آگ لگنے سے کم از کم 111 ملازمین ہلاک ہوئے تھے. اس کے 6 ماہ بعد کپڑے بنانے والی فیکٹری منہدم ہونے کے نتیجے میں 1 ہزار 138 افراد ہلاک ہوئے تھے، جبکہ 3 ہزار سے زائد افراد ملبے تلے دب گئے تھے.

اپنا تبصرہ بھیجیں