6

دن بھرمیں پانی کتنی مقدار میں استعمال کرنا چاہیئے؟ ماہرین نے تحقیق سے اصل بات کا پتا لگا لیا

دن بھرمیں پانی کتنی مقدار میں استعمال کرنا چاہیئے؟ ماہرین نے تحقیق سے اصل بات کا پتا لگا لیا

اسلام آبا د (پرائم نیوز) صحت مند اور خوشگوار زندگی کے لیے پانی کا استعمال بے حد اہم ہے مگر پانی کا بہت زیادہ استعمال بعض اوقات صحت کے لیے نقصان دہ بھی ثابت ہوسکتا ہے.انسانی جسم کو پانی کی مقررہ مقدار کی ضرورت ہوتی ہے اور ماہرین صحت نے بتایا ہے کہ گرمیوں میں جسم کے درجہ حرارت کو برقرار رکھنے کے لیے پانی کا استعمال انتہائی اہم ہے لیکن ایک اہم بات ذہن میں آتی ہے کہ روزانہ جسم کو پانی کی کتنی مقدار کی ضرورت ہوتی ہے اور ضرورت سے زیادہ پانی پینا صحت کے لیے کس حد تک نقصان دہ ہے؟

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ روزانہ اتنی مقدار میں پانی پینا چاہیے جتنی جسم کو ضرورت ہوتی ہے کیونکہ جس طرح پانی کی کمی نقصان دہ ثابت ہوسکتی ہے اسی طرح پانی کا زیادہ استعمال بھی انتہائی نقصان دہ ثابت ہو سکتا ہے لہٰذا زیادہ پانی پینے کے حوالے سے کچھ نقصانات بھی ہیں جن کے بارے میں عوام کو مطلع کیا جا رہا ہے .

بہت زیادہ پانی کا استعمال گردوں کے لیے نقصان دہ ہوسکتا ہے کیونکہ جب حد سے زیادہ پانی کا استعمال کیا جائے گا تو گردوں کو زیادہ کام کرنا پڑے گا جس سے گردوں کو نقصان پہنچنے کا امکان ہوتا ہے.
پانی کا استعمال جہاں ضروری قرار دیا گیا ہے وہیں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ پانی کی مناسب مقدار استعمال کی جائے کیونکہ زیادہ پانی استعمال کرنے سے خون کے حجم میں اضافہ ہو جاتا ہے جس کے باعث دل اور خون کی نالیوں پر دباؤ بڑھ جاتا ہے۔
حد سے زیادہ پانی کا استعمال جسم میں موجود اہم اور ضروری معدنیات کے جسم سے خارج کی صورت میں سامنے آتاہے لہٰذا پانی کی مناسب مقدار استعمال کی جائے.
انسانی جسم بہت زیادہ پانی کی مقدار کو کنٹرول کرنے کی صلاحیت نہیں رکھتا لہٰذا زیادہ پانی نظام خون کے لیے خطرناک ثابت ہوسکتا ہے جس کی وجہ سے سر درد اور متلی سمیت پٹھوں میں درد کا سبب بنتا ہے.

طبی ماہرین کے مطابق پانی کی ضرورت کا انحصار ہر فرد کی عمر، جنس، قد، وزن اور روزمرہ کے معمولات پر ہوتا ہے تاہم کسی دوسرے کی زیادہ پانی پینے کی عادت کو نہیں اپنانا چاہیے اور مقررہ مقدار کے مطابق پانی استعمال کرنا چاہیئے.

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں