1

ایک گرل فرینڈ کے اکاؤنٹ پر کمنٹس کرنے کا جھگڑا ملک کی اعلیٰ شخصیت کے بھانجے کے قتل کی وجہ بن گیا

ایک گرل فرینڈ کے اکاؤنٹ پر کمنٹس کرنے کا جھگڑا ملک کی اعلیٰ شخصیت کے بھانجے کے قتل کی وجہ بن گیا

اسلام آباد ( پرائم نیوز) سابق چیئر مین سینیٹ کے بھانجے فہد ملک کو پچھلی رات فائرنگ کر کے قتل کردیا گیا تھا. اب تک کی اطلاعات کے مطابق اس بات کا پتا چلا ہے کہ فہد 2 گروہوں کے درمیان صلح کروانے کیلئے گیا تھا اور وہاں نکلتے ہی ملزمان نے گھات لگا کر فہد کو قتل کر ڈالا. ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ جھگڑا کچھ دن پہلے شروع ہوا تھا جب فیس بک پر کمنٹس کی بنا پر راشد اور حسنین ایک دوسرے کو قتل کرنے کیلئے تیار ہو گئے.

تفصیلات کے مطابق یہ معاملہ گرل فرینڈ کے فیس بک اکاؤنٹ پر کمنٹس کا تھا جو کہ شدت کی صورت اختیار کر گیا، رات کے سہ پہر میں راجہ ارشد اور حسنین ملک آمنے سامنے آئے جس پر ان کو مزید غصہ آ گیا اور انتقام لینے کے بارے میں سوچنے لگے. پولیس موقع پر ہی پہنچ گئی اور اس معاملے کو ختم کرنے کیلئے ملزمان کو تھانے لے گئی. راجہ راشد شراب کے نشے میں دھت تھا تاہم پولیس اسٹیشن پر اس کا رویہ بھی انتہائی جارحانہ تھا.

حسنین ملک کے والد اور سابق چیئرمین سینیٹ کا بھانجا فہد ملک پولیس اسٹیشن میں گئے اور دونوں کی صلح کروائی مگر راجہ راشد نے حسنین ملک سے صلح کرنے کا ڈرامہ کرنے کے بعد فہد ملک حسنین ملک کے والد طارق ملک کے ساتھ پولیس اسٹیشن سے نکل گیا. سروس روڈ پر گاڑی پہنچتے ہی راجہ راشد نے اپنے ساتھیوں سمیت مورچہ لگا کر فہد کی گاڑی پر فائرنگ شروع کر دی. فہد کو 4 گولیاں‌ لگیں جن میں سے ایک گولی گال پر لگی جو مارتھا چیرتے ہوئے جان لیوا ثابت ہوئی اور فہد موقع پر ہی ہلاک ہو گیا.

اپنا تبصرہ بھیجیں