1

معصوم بچوں کا اغواء، لاہور کی طالبہ اغواکاروں سے بچ کر نکل آئی، وہ کون تھے اور کیسے اغواء کیا؟ طالبہ نے سب بتا دیا

معصوم بچوں کا اغواء، لاہور کی طالبہ اغواکاروں سے بچ کر نکل آئی، وہ کون تھے اور کیسے اغواء کیا؟ طالبہ نے سب بتا دیا

اسلام آباد ( پرائم نیوز) پاکستان میں اس وقت اغواء کے واقعات عروج پر ہیں اور مجرم ایسے ایسے ناقابل یقین طریقے اختیار کر رہے ہیں کہ انسان سن کر ہی کانپ اٹھتا ہے. ایسا ہی ایک واقعہ لاہور کےنواحی علاقے ٹاؤن شپ کی رہائشی ذکیہ کے ساتھ پیش آیا جب وہ بی اے آنر کا امتںحان دے کر سنٹر سے نکلی. پولیس کے سپوکس پرسن کا کہنا ہے کہ ٹاؤن شپ کے رہائشی محمد شفقت کی بیٹی ذکیہ بی ایس آنرز کے امتحانات کیلئے مسلم ٹاؤن میں واقع نجی کالج میں آئی.

ذکیہ کا کہنا ہے کہ امتحان کے ختم ہونے کے بعد وہ امتحانی مرکزسے باہر آئی اور ایک برقعہ پوش خاتون نے اسے کہا کہ یہ خط پڑھ دو وہ خط پڑھنے لگی تو خاتون نے اس کے منہ پر سپرے کر دیا جس سے وہ بے ہوش آ گئی پھر خاتون اسے ایک نامعلوم جگہ پر لے گئی جب اسے ہوش آیا تو اس کے پاس ایک خواجہ سرا بیٹھا تھا، ایک ساتھ والے کمرے سے بچوں کے رونے کی آوازیں آ رہی تھیں. خواجہ سرا نے اسے ایک بار پھر بے ہوشی کا انجیکشن لگا دیا، پچھلے روز جب اسے ہوش آیا تو وہ ان اغواکاروں کے چنگل سے موقع سے فرار ہو گئی اور جناح ہسپتال کے پاس کھڑے ایک ٹریفک وارڈن سے جا کر ٹکرائی جو اسے لے کر جناح ہسپتال پولیس چوکی میں پہنچ گیا جس کے بعد جناح ہسپتال چوکی کے انچارج نے تھانہ مسلم ٹاؤن رابطہ کرکے ذکیہ کو ان کےحوالے کر دیا. جہاں اس کے والدین کے سپرد کر دیا گیا.

اپنا تبصرہ بھیجیں