7

معصوم بچوں کے اغواء، حساس اداروں کو بھی ہوش آ گیا، اب ان 2 نمبرزپرمعلومات فراہم کی جا سکیں گی

معصوم بچوں کے اغواء، حساس اداروں کو بھی ہوش آ گیا، اب ان 2 نمبرزپرمعلومات فراہم کی جا سکیں گی

اسلام آباد ( پرائم نیوز) پاکستان کے مختلف شہروں میں بچوں کو اغواء کر کے ان کے اعضاء کی فروخت کیلئے تھائی لینڈ سمگل کیا جا رہا ہے. پولیس نے لاہور سے سمگل کی گئی ایک بچی سمیت 6 بچوں کو بازیاب کرالیا ہے، جسمانی اعضاء کی فروخت کیلئے بچوں کو اغواء کے سکینڈل کی تحقیقات ڈائریکٹر ایف آئی اے مظہر کاکا خیل کے حوالے کر دی گئی ہیں، بچوں کو گتے کے ڈبوں میں بند کر کے کارگو کے ذریعے بیرون ملک سمگل کیا جاتا تھا. ایف آئی اے کے ڈائریکٹر مظہرالحق کاکا خیل نے تحقیقات کیلئے ٹیم تشکیل دے دی ہے. بدھ کو ایف آئی اے کے ترجمان لاہور میں بچوں کو اغواء کر کے قتل کرنے کے بعد ان کے اعضاء فروخت کرنے کے حوالے سے ایف آئی اے اسلام آباد نے تحقیقات شروع کردی ہیں. بچوں کے اغواء کی تحقیقات کی ذمہ داری ڈائریکٹر مظہر الحق کاکاخیل کو دے دی گئی ہے.

مظہر الحق کاکا خیل کا کہنا ہے کہ بچوں کے قتل اور اعضاء فروخت کرنے کے بارے میں معلومات ایف آئی اے کو فراہم کریں. اغواء اعضاء بیچنے کے متعلق معلومات شہری ان نمبرز پر رابطہ کریں 2612281-051-03345511457

ذرائع کا کہنا ہے کہ بچوں کو اغواء کر کے قتل کرنے کے بعد اعضاء بیرون ملک فروخت کرنے کی خبریں موصول ہوئی ہیں اور پولیس نے لاہور سے اغواء کی گئی ایک بچی کے ساتھ 6 مزید بچوں کو باز یاب کرایا ہے. ذرائع کا کہنا ہے کہ بچوں کو بے ہوش کر کے ان کے منہ پر پٹیاں باندھی ہوئی تھیں جبکہ ان کی ٹانگیں اورہاتھ بھی باندھے ہوئے تھے. سوشل میڈیا پر بچوں کے اغواء کی تصاویر سامنے آنے پر ایف آئی اے نے معاملے کی تحقیقات شروع کر دی ہیں. ایف آئی اے کی ٹیم لاہور پولیس کے ان اہلکاروں کے بیانات کو درج کرے گی جنہوں نے بچوں کو بازیاب کرایا ہے جبکہ بچوں اور ان کے والدین سے بھی ایف آئی اے ملاقات کریں گے تاکہ اغواء کرنے والوں کے بارے میں کوئی سراغ مل سکے.

اپنا تبصرہ بھیجیں