1

لاہور، بچوں کے اغواء کے الزام میں پکڑکر تشدد کا نشانہ بنائے جانے والے آخر کون تھے؟ پولیس نے پتا لگا لیا

لاہور، بچوں کے اغواء کے الزام میں پکڑکر تشدد کا نشانہ بنائے جانے والے آخر کون لوگ تھے؟ پولیس نے پتا لگا لیا

لاہور ( پرائم نیوز) اغواء کار ہونے کے شک میں مشتعل شہریوں کے ہتھے چڑھنے والی عورت لاہور کے ایک سکول کی استانی نکلی اس کے علاوہ لاہور میں‌اب تک لوگوں‌کے ہاتھوں تشدد کا شکار ہوکر پولیس کے حوالہ کیے جانے والے تمام افراد عام شہری نکلے، سلامت پورہ میں خاتون ٹیچر کو بھی اغواء کار دے کر پولیس کے حوالے کردیا گیا ہے جسے تفتیش کے بعد چھوڑ دیا گیا ہے. پچھلے دنوں سے مزید 3 بچے مل گئے ہیں. اناد کلی سے اغواء ہونے والی3 سالہ بچی جنت حیات کا دوسرے دن بھی کوئی پتا نہ لگ سکا. پچھلے دن گجر پورہ کے علاقہ میں اہل علاقہ نے ایک نوجوان کو مبینہ اغواء قرار دیتے ہوئے قابو کر کے اس کی خوب درگت بنائی اور اس کے بعد اسے پولیس کے حوالے کر دیا گیا. پولیس کی تحقیقات سے نوجوان کی شناخت ذیشان سے ہوئی اور وہ گھر سے جانوروں کیلئے چارہ لینے آیا تھا.

باغبانپورہ اور مدینہ کالونی میں بھی شہریوں نے 2 ریڑھی بانوں کو مبینہ اغواء کار قرار دیتے ہوئے پکڑ کر ان کی درگت بنائی. شہریوں نے دونوں کے ہاتھ پاؤں رسیوں سے باندھ کر ان کی خوب پٹائی کی اور اس کے بعد پولیس کے حوالے کر دیا گیا. پولیس کا کہنا ہے کہ تحقیقات میں دونوں کی شناخت ریڑھی بان سے ہوئی ہے. جبکہ دونوں‌علاقوں کے معززین نے بھی ان کی ضمانتیں دی ہیں جس بناء پر انہیں چھوڑ دیا گیا ہے. پیر کے دن باغپانپورہ میں بھی اہل علاقہ نے ایک شخص کو اغواء کار قرا دیتے ہوئے اسے شدید تشدد کا نشانہ بنایا تھا اور پولیس کی حراست میں دینے سے انکار کر دیا تھا. پولیس نے اضافی نفری طلب کرتے ہوئے مذکورہ شخص کو مشتعل مظاہرین سے اپنی تحویل میں لے لیا تھا تاہم پولیس کی تحقیقات میں مذکورہ شخص بھی عام شہری نکلا اور اس کی بھی کسی طرح کی منفی سرگرمیاں دیکھنے کو نہیں ملیں. اس سے پہلے راوی روڈ سے بھی کیا جانے والا شخص مبینہ اغواء کار تحقیقات میں اسی علاقے کا رہائشی نکلا تھا اور اسے تحقیقات کے بعد چھوڑ دیا گیا تھا.

اپنا تبصرہ بھیجیں