6

قندیل بلوچ قتل کیس، ملزم وسیم اپنے بیان سے بدل گیا، قندیل کا قتل میں اکیلے نے نہیں بلکہ…مزید افراد کی شمولیت کا اعتراف کرلیا

قندیل بلوچ قتل کیس، ملزم وسیم اپنے بیان سے بدل گیا، قندیل کا قتل میں اکیلے نے نہیں بلکہ…مزید افراد کی شمولیت کا اعتراف کرلیا

سوشل میڈیا سے شہرت پانے والی پاکستانی ماڈل اور اداکارہ قندیل بلوچ کے قتل کیس میں نئے انکشافات سامنے آ گئے ہیں. قندیل کے قاتل بھائی وسیم کو پولی گرافک اور ڈی این اے ٹیسٹ کیلئے رات گئے ملتان سے لاہور منتقل کیا گیا.

ملزم وسیم نے اپنا بیان بدل دیا اور قتل میں مزید افراد کی شمولیت کا اعتراف کر لیا ہے. اس کا کہنا ہے کہ قندیل بلوچ کے قتل کا منصوبہ میں اکیلے نے نہیں بلکہ اپنے رشتہ دار حق نواز کے ساتھ مل کر بنایا تھا.

وسیم کا کہنا ہے کہ قتل میں اس کی ساری برادری شامل ہے جس کی طرف سے مجھ پر یہ اقدام اٹھانے کیلئے دباؤ ڈالا جا رہا تھا. میڈیا سے بات چیت کرتے وقت وسیم نے بتایا کہ قتل کے وقت حق نواز میرے ساتھ گھر میں موجود تھا جس نے قتل کرنے میں میری مدد کی جبکہ قتل کے وقت ایک اور رشتہ دار باسط میرے گھر سے تھوڑے فاصلے پر ہمارا انتظار کر رہا تھا. پولیس کے مطابق قندیل کے قتل کا فیصلہ برادری میں ہوا اور وسیم نے قتل کی پوری ذمہ داری لے لی اور کزنز کو دوسرے شہروں سے بلایا گیا تھا.

وسیم نے مزید بتایا کہ قندیل کو قتل کرنے کے بعد میں اور میرے دونوں رشتہ دار باسط اور حق نواز کار میں فرار ہو گئے تھے. پولیس نے ڈیری غازی خان میں مقیم وسیم کی دونوں بھابیوں کو بھی حراست میں لے لیا ہے. جن سے تفتش جاری ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں