4

خبردار! پانی پینے سے پہلے اس خبر کو ضرور پڑھ لیں، منرل واٹر کے 13 برانڈ‌ میں آلودگی آ پ کو خطر ناک بیماری میں مبتلا کر سکتی ہے

خبردار! پانی پینے سے پہلے اس خبر کو ضرور پڑھ لیں، منرل واٹر کے 13 برانڈ‌ میں آلودگی آ پ کو خطر ناک بیماری میں مبتلا کر سکتی ہے

پینے کے صاف پانی کے نام پرفروخت کیے جانے والے منرل واٹر کے 13 برانڈ‌ کا کیمیائی طورپرآلودہ ہونے کی اہم خبر سامنے آئی ہے جن کے پینے سے پھیپھٹروں، مثانے، جلد، پراسٹیٹ، گردے اور جگر کے کینسر کے ساتھ بلڈ پریشر، شوگر، دل کی بیماریاں، پیدائشی نقائص اور بلیک فٹ جیسی بیماریوں کے لاحق ہونے کا امکان ہو سکتا ہے.

پاکستان آبی وسائل کی تحقیقاتی کونسل وزارت سائنس و ٹیکنالوجی کی ہدایت پر بوتلوں میں بند پانی کی کوالٹی کی مانیٹرنگ ایجنسی کے طور پر کام کر رہی ہے. اس ایجنسی نے اپریل تا جون 2016 کی سہ ماہی میں ا سلام آباد، راولپنڈی، مظفر آباد، فیصل آباد، سیالکوٹ، سرگودھا، ملتان، لاہور، بہاولپور، کراچی، ٹنڈوجام، کوئٹہ اور پشاور سے بند منرل پانی کے 114 برانڈ‌ کے سیمپل حاصل کئے ہیں اور ان سیمپلز کا پاکستان سٹینڈرڈ اینڈ‌کوالٹی کنٹرول اتھارٹی کے تجویز کر دہ معیار کے مطابق تجزیہ کیا گیا. اس تجزیہ کے مطابق 13 برانڈ‌ ایکواہلس، نیونیشن، اوسم، ویل کیئر، رائل اوسس، نلیو پلس، لیوون، الحبیب، ایکوانیشنل، نیشن، نعمت، سزکول اور رائل بلیو کے نمومے کیمیائی طور پر آلودہ پائے گئے ہیں.( نیونیشن، اوسم، ویل کیئر، نیشن، نعمت اور سزکول) کے نمونوں میں سنکھیا کی مقدار سٹینڈرڈ سے زیادہ 13 پی پی بی سے لے کر 50 پی پی بی تک تھی جبکہ پینے کے پانی میں اس کی حد مقدار صرف 10 پی پی بی تک ہے.

پی سی آر ڈبلیو کا کہنا ہے کہ پینے کے پانی میں سنکھیا کی زیادہ مقدار کی موجودگی بے حد مضر صحت ہے کیونکہ اس کی وجہ سے پھیپھٹروں، مثانے ، پر اسٹیٹ، گرسے ، نال اور جگر کا کینسر ہونے کا خدشہ ہے. باقی برانڈ‌کے سیمپلز میں سوڈیم اور پوٹا شیم کی مقدار پی اسی کیو سی اے کی حد مودار سے کافی زیادہ پائی جاتی ہے.

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں