3

ظالم ماں کو اتنا بھی یاد نہیں کہ اس نے اپنے کتنے بچوں کو قتل کیا ہے، انتہائی سنگین واقعہ

ظالم ماں کو اتنا بھی یاد نہیں کہ اس نے اپنے کتنے بچوں کو قتل کیا ہے، انتہائی سنگین واقعہ

جرمنی میں نوزائیدہ بچوں‌ کے بدترین مقدمات میں‌سے ایک مقدمےمیں ماں نے اپنے بچوں کو قتل کرنے کا اعتراف کر لیا. اور ماں کو اتنا بھی یاد نہیں کہ اس نے کتنے بچوں‌ کو قتل کیا ہے.

45 سالہ اینڈریا جیوپنر پر الزام ہے کہ اس نے اپنے چار بچوں کو‌قتل کیا ہے. بچوں کی باقیات گزشتہ برس تو لیے اور بلاسٹک کے بیگ سے برآمد ہوئی تھیں. اینڈریا سے جب سوال کیا گیا کہ اس نے اپنے 8 بچوں میں سے کتنے بچوں کا قتل کیا ہے تو اس نے جواب دیا کہ مجھے ٹھیک سے یاد نہیں ہے، شاید 2، 3 یا 4 کو قتل کیا ہو گا.

ایڈریا پر تمام بچوں کے قتل کا الزام نہیں لگایا جا سکتا اس کی وجہ یہ ہے کہ بچوں کی ملنے والی 8 باقیات میں سے 3 بہت گل سڑ چکی تھیں جبکہ 1 پیدائشی مردہ بچے کی بھی تھی.

8 بچوں کی یہ باقیات والفنیل کے چھوٹے ٹاؤن باوارین میں ایڈریا کے اپارٹمنٹ سے برآمد ہوئیں ہیں. ایڈریا کے شوہر 55 سالہ جوہان کو بھی گرفتار کر لیا گیا ہے. اس پر الزام لگایا گیا ہے کہ اس نے اپنی بیوی کو 2003ء سے 2013ء کے درمیان پیدا ہونے والے بچوں کے قتل سے منع نہیں کیا تھا.

اپنا تبصرہ بھیجیں