11

مچھلی کے بعد دودھ پینے سے پھلبیری، سائنسدانوں نے تحقیق سے اصل بات کا پتا لگا لیا

مچھلی کے بعد دودھ پینے سے پھلبیری، سائنسدانوں نے تحقیق سے اصل بات کا پتا لگا لیا

کھانے پینے کی چیزوں کے بارے میں بنی ہوئی تصوراتی کہانیوں سے ہر کوئی واقف ہے. کھانوں کی مختلف اقسام کے متعلق معاشرے میں عجیب و غریب کہانیاں سننے کو ملتی ہیں مگر سائنسی اعتبار سے آج بھی بہت سے لوگ اسے سمجھنے سے محروم ہیں.یہ بات تقریباً ہرکسی نے سنی ہوگی کہ مچھلی کھانے کے بعد دودھ پینے سے جسم پر سفید داغ بن جاتے ہیں جسے پھلبیری کہا جاتا ہے. اس کے علاوہ کچھ لوگوں کا یہ بھی کہنا ہے کہ جن مہینوں میں (ر) آتا ہو ان مہینوں میں مچھلی نہیں کھانی چاہیئے کیونکہ مچھلیوں کی پیدائش ان مہینوں میں ہوتی ہے. جبکہ بیرون ممالک میں مچھلی کا استعمال ہر موسم میں کیا جاتا ہے. بھارت میں مچھلی اور دودھ کا ایک ساتھ استعمال بد شگون سمجھنے کے ساتھ ساتھ کئی بیماریوں کا موجب بھی سمجھا جاتا ہے. اس قسم کی تصوراتی کہانیاں مصر، مشرق وسطیٰ، قرون وسطیٰ کے یورپ، نوآبادیاتی امریکہ اور نائیجیریا میں پائی جاتی ہیں.

سائنسدانوں نے تحقیق سے ثابت کر دیا ہے کہ مچھلی کے بعد دودھ کا استعمال کسی بھی بیماری کا موجب نہیں ہے اور نہ ہی اس سے پھلبیری ہوتی ہے. جسم پر سفید نشان انسانی جسم میں بننے والے سیلز یعنی میلنوسائٹس کی ٹوٹ پھوٹ کی وجہ سے بنتے ہیں. اس کے علاوہ فنگس انفیکشن بھی سفید داغ پڑنے کی بڑی وجہ ہیں.متلی کھجلی یا پیٹ میں درد خاص طور پر کھانے کے بعد الرجی کی صورتیں ہو سکتی ہیں. مچھلی کے بعد دودھ پینے سے انسان کسی بھی بیماری کا شکار نہیں ہوتا.

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں