1

مفتی عبدالقوی نے قندیل بلوچ کے ساتھ ملاقات کے بارے میں بیان دے دیا

مفتی عبدالقوی نے قندیل بلوچ کے ساتھ ملاقات کے بارے میں بیان دے دیا

رویت ہلال کمیٹی کے سابق رکن مفتی عبدالقوی نے ماڈل قندیل بلوچ کے قتل کی شدید مزمت کی. ان کا کہنا ہے کہ اسلام اور آئین اسیے کسی انسان کے قتل کی اجازت نہیں دیتا. اپنے دیے گئے ایک بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ یہ ایک انتہائی افسوس ناک واقعہ ہے جس کی مذمت کی جانی چاہیئے. قندیل بلوچ کے قتل کے بعد الزام تراشی کرنے والوں کو عبرت حاصل کرنے کے حوالے سے ان کا کہنا ہے کہ ایک عالم دین ہونے کی حیثیت سے یہ ایک المناک واقعہ ہے اور جس طریقے سے قندیل بلوچ کا قتل کیا گیا ہے وہ اسلام اور آئین کے خلاف ہے.

قرآن پاک میں اللہ تبارک تعالیٰ کا ارشاد پاک ہے کہ جس نے ایک جان کو قتل کیا اس نے پوری انسانیت کا قتل کیا.

مفتی عبدلاقوی نے قندیل بلوچ کے ساتھ اپنی ملاقات کے بعد میڈیا پر آنے والی سیلفیوں اور ویڈیو کی وضاحت کی. انہوں نے بتایا کہ جب وہ کراچی سے ملتان گئے تو قندیل بلوچ نے انہیں پانچ پیغامات بھیجے تھے جن میں انہوں نے اپنی غلطی کا اعتراف کیا تھا. مفتی صاحب کا کہنا ہے کہ میں نے قندیل بلوچ کو معاف کیا اور اب میں ان کے تمام معاملات اللہ کے سپرد کرتا ہوں.

اپنا تبصرہ بھیجیں