1

بچپن کی کچھ ایسی ناپسندیدہ عادات جو جوانی میں خطرناک بیماری سے محفوظ رکھتی ہیں، دلچسپ تحقیق

بچپن کی کچھ ایسی ناپسندیدہ عادات جو جوانی میں خطرناک بیماری سے محفوظ رکھتی ہیں، دلچسپ تحقیق

بچپن میں کچھ بچوں کو ناخن کترنے اور انگھوٹھا چوسنے کی عادت ہوتی ہے جو جوانی میں ان کیلئے نفع بخش بن جاتی ہے. ایسی عادت اپنانے والے لوگ جوانی میں الرجی سے بچے رہتے ہیں. ایک مطالعے سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ بچوں کی یہ بری عادتیں جوانی میں انہیں الرجی سے دور رکھتی ہیں. بچپن میں انگھوٹھا چوسنے والے افراد کا جب الرجی ٹیسٹ کروایا گیا تو ان میں زیادہ تر افراد کی رپورٹ نیگٹو ظاہر ہوئی.

نیوزی لینڈ‌ کی یونیورسٹی آف اوٹاگو کی طرف سے ایک تحقیق کی گئی جس سے پتا چلا کہ انگھوٹھا چوسنے اور ناخن چبانے والی عادت بچوں کے قدرتی دماغی نظام کو بدل کر دکھ دیتا ہے. ماہرین کا کہنا ہے کہ ان کی ایسی عادات سے جراثیم کی مختلف اقسام بچوں کی چھوٹی عمر میں ہی ان امرا ض کا مقابلہ کرتے ہیں اور جوانی میں الرجی سے محفوظ رکھتے ہیں. ماہرین نے 1037 افراد کا ان کی پیدائش سے 40 سال کی عمر تک کا مطالعہ کیا اور والدین سے بچوں کی عادتوں کے بارے میں پوچھا گیا کہ کیا 7،5،9 یا 11 سال تک کی عمر میں انگھوٹھا چوستے اور ناخن چباتے تھے یا نہیں؟ 13 سے 32 سال کی عمر میں ان کے الرجی ٹیسٹ کیے گئے جس سے پتا چلا کہ ایسے افراد کو الرجی کے خطرات کم ہوتے ہیں.

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں