8

فیس بک نے دہشت گردی کو روکنے کیلئے اہم اقدامات کا فیصلہ کرلیا

فیس بک نے دہشت گردی کو روکنے کیلئے اہم اقدامات کا فیصلہ کرلیا

دنیا کی بڑی کمپنیوں نے ویڈیو کے حوالے سے کام کرنے والی ویب سائٹس سے شدت پسندی پرمنحصرمواد کو ختم کرنے کیلئے خاموشی سے اقدامات اٹھانے کا آغاز کر دیا ہے. برطانوی میڈیا کے مطابق ان کمپنیوں میں گوگل کی یوٹیوب اورسوشل نیٹ ورک کی سائٹ فیس بک شامل ہیں. ان ویب سائٹس نے دہشت گردی پرمنحصرمواد کو روکنے کیلئے خودکار طریقہ اپنانے کیلئے کام کا آغاز کردیا ہے. یہ انٹرنیٹ کمپنیاں ویڈیو کی پہنچ کو روکنے کیلئے جن اقدامات کی کوشش کر رہی ہیں ان میں حکومت کی طرف سے بھی دبائو ہے کیونکہ دہشت گردی کے حملے شام سے امریکا تک رسائی حاصل کر چکے ہیں.

ا

س مقصد کیلئے انٹرنیٹ کمپنیاں اس ٹیکنالوجی کو استعمال کرنے پرتوجہ دے رہی ہیں جسے ابتدائی طور پرانٹرنیٹ پرکاپی رائٹ مواد کی شناخت اور اسے ختم کرنے کے مقصد کیلئے تیارکیاگیا تھا. اس ٹیکنالوجی کے ذریعے ویب سائٹس پر موجود شدت پسندانہ مواد کی شناخت کی جائے گی اور اسے فوری بلاک کیا جا سکے گا.

انٹرنیٹ کمپنیوں کی طرف سے اس ٹیکنالوجی کے استعمال کی تصدیق نہیں ہو سکی. لہٰذا ٹیکنالوجی سے واقف کئی افراد نے کیا ہے کہ اس کی مدد سے پوسٹ ہونے والی ویڈیو کی شناخت کی جا ساکے گی کہ اس میں کوئی مواد تشدد پراکسانے پرمبنی تونہیں.
ذرائع کے مطابق ابھی تک یہ بات صحیح طورپرظاہرنہیں ہوئی کہ ویڈیوزکو کس حد تک خودکارطریقے سے بلاک کیا جا سکے گا اوراس میں کتنی انسانی مدد کی ضرورت ہو گی اوریہ کیسے معلوم ہوگاکہ کونسی ویڈیو شدت پسندی پرمبنی ہے.؟

اپنا تبصرہ بھیجیں